Type to search

سیاست فيچرڈ

واشنگٹن: سندھی فلسفی اور دانشور جاوید بھٹو قتل

سندھ کے معروف فلسفی اور سکالر جاوید بھٹو کو امریکی دارلحکومت واشنگٹن ڈی سی میں جمعہ کے روز فائرنگ کر کے قتل کر دیا گیا۔ امریکا کے مؤقر اخبار ’’دی واشنگٹن پوسٹ‘‘ کی ایک رپورٹ کے مطابق پولیس نے 45 برس کے ہلمن جورڈن کو جاوید بھٹو کے قتل کے الزام میں حراست میں لیا ہے۔ مبینہ ملزم جاوید بھٹو کا پڑوسی تھا جس کی کچھ روز قبل ہی مقتول سے تلخ کلامی ہوئی تھی۔

جاوید بھٹو کے خاندانی ذرائع کا کہنا ہے:’’حملہ آور شراب کے نشے میں دھت ہو کر شورشرابہ کیا کرتا تھا جس کے باعث جاوید بھٹو نے عمارت کے مالک سے اس کی شکایت بھی کی تھی۔‘‘

جاوید بھٹو نفیسہ ہودبھائی کے شوہر اور پاکستان کے ممتاز ماہر طبیعات پرویز ہودبھوئی کے بہنوئی تھے۔ وہ امریکا منتقل ہونے سے قبل سندھ یونیورسٹی کے شعبۂ فلسفہ کے سربراہ کے طور پر خدمات انجام دے رہے تھے۔

ٹوئٹر پر بہت سے پاکستانی صحافیوں اور دانشوروں نے جاوید بھٹو کے قتل پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ سینئر پاکستانی صحافی اویس توحید نے ٹویٹ کیا:’’واشنگٹن میں جاوید بھٹو کے قتل سے سندھ  بھر کے عوام میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ وہ ایک فلسفی اور سیاسی کارکن تھے جنہوں نے ضیاء الحق کے دورِ آمریت میں جمہوریت کے لیے بے مثل جدوجہد کی۔‘‘

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *