Type to search

خبریں فيچرڈ معیشت

ایمنسٹی سکیم، صرف دو فی صد ٹیکس ادا کرکے واجبات کلیئر کروانا ممکن

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے نئے چیئرمین شبر زیدی نے کہا ہے کہ ایمنسٹی سکیم کے تحت صنعتی صارفین سیلز ٹیکس کا محض دو فی صد ادا کر کے اپنے واجبات کلیئر کروا سکتے ہیں اور ٹیکس نیٹ میں شامل ہو سکتے ہیں۔

انہوں نے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا، اکائونٹس منجمد کرنے کے حوالے سے قانون میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی، تاہم ہمارے پیش نظر کاروبار کے لیے ایک بہتر ماحول پیدا کرنا ہے۔

انہوں نے کہا، اکائونٹ منجمد کرنے سے 24 گھنٹے قبل صارف کو اس بارے میں آگاہ کر دیا جاتا ہے۔

انہوں نے کہا، اس وقت ڈسکوز کے پاس بجلی کے رجسٹرڈ صنعتی صارفین کی تعداد تین لاکھ 41 ہزار ہے جب کہ رواں برس سات ہزار نئے صنعتی گیس کنکشنز فراہم کیے گئے ہیں۔

چیئرمین ایف بی آر کا کہنا تھا، ملک بھر میں سیلز ٹیکس ادا کرنے والے صارفین کی تعداد محض 38 ہزار ہے جو بہت بڑا فرق ہے۔

انہوں نے مزید کہا، رواں برس یکم جولائی کے بعد ایف بی آر صنعتی صارفین کو ٹیکس نیٹ میں شامل کرنے کے لیے قانون سازی کروائے گا جب کہ ٹیکس نادہندگان کے خلاف کارروائی کا آغاز بھی کیا جائے گا۔

شبر زیدی نے کہا، صنعتی صارفین کو ٹیکس نیٹ میں شامل کرنے کے لیے سب سے پہلے تو قانون سازی کی جائے گی جب کہ اس کے بعد یہ دیکھا جائے گا کہ یہ صارف کس طرح ٹیکس ادا کریں گے۔

انہوں نے کہا، یہ ممکن ہے ایسے ٹیکس صارف بھی ہوں جن پر سرے سے ٹیکس ہی لاگو نہ ہوتا ہو۔

ایف بی آر کے سربراہ نے مزید کہا، یہ پہلا موقع ہے کہ ہم مینوفیکچررز کے ساتھ مصالحت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، تاہم میری تمام فریقین سے درخواست ہے کہ وہ حالیہ ایمنسٹی سکیم سے فائدہ اٹھائیں کیوں کہ ممکن ہے، جولائی میں اس میں بڑے پیمانے پر تبدیلی لائی جائے۔

انہوں نے اعتراف کیا کہ ماضی میں ایف بی آر سے غلطیاں ہوئی ہیں اور یہ عزم دہرایا کہ ہم ان غلطیوں کی اصلاح کرنے کے لیے تیار ہیں۔

 

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *