Type to search

خبریں خواتین فيچرڈ

ریپ کے الزامات پر اداکار ادیتیہ پنچولی کیخلاف مقدمہ درج

اداکارہ کنگنا رناوت کی بہن رنگولی کی جانب سے ادیتیہ پنچولی کیخلاف مقدمہ درج کرایا گیا ہے جس میں الزام عائد کیا گیا ہے کہ اداکار نے انکی بہن کنگنا کو دس سال قبل متعدد دفعہ جنسی ہراسگی کا نشانہ بنایا۔ادیتیہ پنچولی نے ان الزامات کی تردید کی ہے۔

اس سے قبل کنگنا رناوت نے اپنے انٹریو میں کہا کہ ادیتہ پنچولی نے ان سے ایک کروڑ روپے ہتھیائے اور انہیں اس وقت جنسی طور پر ہراساں کیا جب وہ بالی ووڈ کا حصہ نہیں تھیں۔ اداکار کیخلاف انڈین پینل کوڈ کی دفعہ 376، 328، 384، 341، 342، 323، 506 کے تحت ممبئی کے پولیس اسٹیشن میں ایف آئی آر درج کی گئی۔

اداکارہ کے مطابق انہوں نے اس وقت بھی ادیتیہ کے خلاف پولیس میں شکایت درج کروائی تھی تاہم پولیس نے انہیں صرف وارننگ دے کر چھوڑ دیا۔ ایف آئی آر درج ہو نے کے بعد پولیس نے کارروائی کا آغاز کردیا۔ معاملے پر اداکارہ کی بہن کی متعدد ٹوٹیس بھی سامنے آئیں ہیں۔

یاد رہے کہ رواں سال کنگنا رناوٹ نے ادیتیا پنچولی پر جنسی ہراساں اور ریپ کا الزام عائد کیا۔جس کے بعد ادیتیا اور انکی اہلیہ زرینہ نے کنگنا اور ان کی بہن کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ درج کروادیا۔

بعدازاں زرینہ وہاب کا اپنے ایک انٹرویو میں کہنا تھا کہ کنگنا رناوٹ 4 سال سے زائد عرصے تک ان کے شوہر کے ساتھ تعلقات میں رہیں اور بعد میں ان پر جنسی ہراساں اور ریپ کا الزام عائد کردیا۔

خیال رہے کہ کنگنا رناوٹ نے ادیتیا پنچولی پر پہلی بار جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزامات 2017 میں لگائے تھے اور دعویٰ کیا تھا کہ کیریئر کے ابتدائی دنوں میں اداکار نے انہیں استعمال کیا اور ان کے ساتھ ناروا سلوک رکھا۔

کنگنا رناوٹ کے مطابق کیریئر کے ابتدائی دنوں میں ان کے اور ادیتیا پنچولی کے درمیان تعلقات تھے اور اداکار نے ان کے ساتھ نامناسب رویہ اختیار کرنے سمیت انہیں دھوکا دیا۔

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *