Type to search

سیاست فيچرڈ قومی

ماضی میں جیسے ملک کو چلایا جارہا تھا اب ویسے نہیں چل سکتا، عمران خان

اسلام آباد: وزیراعظم پاکستان عمران خان نے کہا ہے کہ ان کا جینا مرنا پاکستان میں ہے اور ملک سے باہر کوئی جائیداد نہیں جب کہ سابقہ حکمرانوں کے اربوں روپے ملک سے باہر پڑے ہیں، ماضی میں جیسے ملک کو چلایا جارہا تھا اب ویسے نہیں چل سکتا۔

گوجرانوالہ چیمبر آف کامرس کی اسلام آباد میں تقسیم انعامات کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ملک کے عوام کو فیڈرل بورڈ آف ریونیو(ایف بی آر) پر یقین نہیں ہے اس لیے لوگ محصول دینے سے  گھبراتے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہمارا کام ہے کہ صنعت کی ترقی میں کاروباری حضرات کی مدد کریں اور انہیں سہولیات دیں تاکہ ملک کا ہر طبقہ ترقی کر سکے۔ ہماری حکومت جو کچھ کر رہی ہے وہ عوام کے لیے ہے، میرا کوئی ذاتی کاروبار اور ایجنڈا نہیں، نہ بیرون ملک جائیداد ہے۔

خطاب کے دوران عمران خان نے کہا کہ ہماری کوشش ہوگی صنعت کاروں کو زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کریں، کیوں کہ حکومت سمجھتی ہے کہ صنعتی ترقی ہی ملک کو آگے لے کر جاسکتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم نے سب کو ٹیکس نیٹ میں لے کر آنا ہے تاہم دباؤ ڈالنے والوں سے کہتا ہوں پیچھا ہٹا تو قوم سے غداری ہو گی، شناختی کارڈ کی شرط کی مخالفت وہ تاجر کر رہے ہیں جو اسمگلنگ کا سامان بیچتے ہیں۔

ایف بی آر سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ اس ادارے کو عوام کے لیے قابل اعتبار بنائیں گے کیوں کہ ماضی کی کارکردگی کے سبب عوام کا اعتماد اٹھ چکا ہے۔ایف بی آر میں 700 ارب روپے کی چوری ہو رہی ہے اور ہمارا پہلا کام  ایف بی آر کو ٹھیک کرنا ہے۔

وزیراعظم نے بتایا کہ پاکستان میں 70 فیصد ٹیکس صرف 300 کمپنیاں دیتی ہیں اور جیسے پاکستان کو پہلے چلایا جا رہا تھا اب ویسے نہیں چل سکتا۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *