Type to search

فيچرڈ کھیل نوجوان

اسپاٹ فکسنگ کیس میں سزا یافتہ شرجیل خان کی قومی ٹیم میں واپسی؟

پاکستان سُپر لیگ اسپاٹ فکسنگ کیس میں سزا یافتہ پاکستانی کرکٹر شرجیل خان کی سزا 10 اگست کو ختم ہو گی۔ اگر جارح مزاج اوپنر شرجیل خان پی سی بی کے ری ہیبلیٹیشن پروگرام میں حصہ لیتے ہیں تو ستمبر 2019 میں قومی ٹیم کی نمائندگی کرنے کے اہل ہوجائیں گے۔

ترجمان پی سی بی کے مطابق سزا مکمل ہونے پر شرجیل خان کو ری ہیب پروگرام مکمل کرنا ہوگا، جس کے لیے کرکٹر کی طرف سے تاحال کوئی رابطہ نہیں کیا گیا ہے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے ترجمان نے مزید بتایا کہ ری ہیب پروگرام مکمل ہونے کے بعد شرجیل خان کو کرکٹ کھیلنےکی اجازت ہوگی۔

دوسری جانب کرکٹر شرجیل خان کے وکیل شیغان اعجاز نے بتایا کہ ری ہیب پروگرام کیلیے جلد پی سی بی سے رابطہ کریں گے۔ واضح رہے کہ اسپاٹ فکسنگ کیس میں کرکٹر شرجیل خان پر پاکستان کرکٹ بورڈ کوڈ کی پانچ شقوں کی خلاف ورزی کا الزام تھا جس کے بعد ان پر پانچ سال کی پابندی عائد کی گئی تھی۔

شرجیل خان اپنی ڈھائی سال کی معطلی کی سزا مکمل کرنے کے بعد فاسٹ باؤلر محمد عامر کی طرح جلد از جلد انٹر نیشنل کرکٹ میں واپسی کرنا چاہتے ہیں۔ شرجیل خان نے پاکستان کے لیے ایک ٹیسٹ، 25 ون ڈے اور 15 ٹی ٹونٹی میچز کھیلے ہیں جن میں بالترتیب 44، 812 اور 360 سکور کیے ہیں۔

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *