Type to search

انٹرٹینمنٹ انسانی حقوق جرم خبریں خواتین فيچرڈ

قندیل قتل کیس: ملزم بیٹوں کو معاف کرنے کی درخواست مسترد

عدالت نے والدین کی جانب سے ملزمان بیٹوں کو معاف کرنے کی درخواست پر فیصلہ سنا دیا۔ ماڈل کورٹ کے جج عمران شفیع نے قندیل قتل کیس میں والدین کی جانب سے ملزمان بیٹوں  کو معاف کرنے کی درخواست مسترد کر دی۔ عدالتی بیان کے مطابق غیرت کے نام پر قتل کے اس کیس کا فیصلہ تمام گواہوں کی شہادتیں مد نظر رکھتے ہوئے بعد میں سنایا جائے گا۔

قندیل بلوچ کے والد نے گزشتہ روز ملتان کی ماڈل عدالت میں جمع کرائے گئے بیان حلفی میں کہا تھا کہ انہوں نے اپنی بیٹی کے قتل میں نامزد بیٹوں وسیم اور اسلم کو اللہ کے واسطے معاف کر دیا۔

عدالت نے درخواست مسترد کرتے ہوئے کہا کہ غیرت کے نام پر قتل کا فیصلہ تمام گواہوں کی شہادتیں قلم بند ہونے کے بعد کیا جائے گا۔

قندیل بلوچ کو ان کے بھائی محمد وسیم نے 15 جولائی 2016 کو ملتان میں قتل کر دیا تھا۔

قندیل بلوچ کے والد محمد عظیم بلوچ نے اس وقت اپنی بیٹی کے قتل کا مقدمہ اپنے بیٹے محمد وسیم اوراس کے ساتھیوں حق نواز، محمد ظفر اور ان کے ڈرائیور عبدالباسط کے خلاف درج کروایا تھا۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *