LOADING

Type to search

بڑی خبر سیاست فيچرڈ قومی

"اگر ہمارے دھرنے میں نہ آنے سے شہباز شریف کا بیٹا رہا ہوتا ہے تو شوق سے کروائیں”

مولانا فضل الرحمان پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کے خلاف اسلام آباد میں دھرنا دینے کی تیاری زور و شور سے کر رہے ہیں۔ انہوں نے تمام سیاسی جماعتوں کو اس دھرنے میں شامل ہونے کی دعوت دی ہے لیکن ملک کی دو بڑی سیاسی جماعتیں ابھی تک اس حوالے سے کوئی واضح فیصلہ نہیں کر سکی ہیں۔

جمیعت علمائے اسلام (ف) کے رہنما حافظ حسین احمد نے ایکسپریس نیوز کے پروگرام کل تک میں میزبان جاوید چوہدری کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ہمارے دھرنے میں نہ آنے سے شہباز شریف کا بیٹا رہا ہوتا ہے تو شوق سے کروائیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ کچرا صاف کرنے کا جو تجربہ عمران خان اور اس کے ساتھیوں کو ہے وہ کسے کے پاس نہیں ہے، تمام سیاسی جماعتوں کا کچرا پی ٹی آئی کی کابینہ میں ہے۔

جاوید چوہدری نے سوال کیا کہ حکومت کے خلاف جنگ آپ کو اکیلے لڑنی پڑے گی مجھے نہیں لگتا کہ مسلم لیگ ن یا پیپلزپارٹی آپ کا ساتھ دیں گی تو کیا آپ اکیلے لڑ لیں گے؟

جاوید چوہدری کے اس سوال کا جواب دیتے ہوئے حافظ حسین احمد نے کہا اگر پیپلزپارٹی کو ہمارے دھرنے کے اعلان سے فائدہ ہے تو اللہ انہیں فائدہ پہنچائے، اگر شہباز شریف اپنے بیٹے کو رہا کروانا چاہتے ہیں تو بڑے شوق سے کروائیں۔ اگر گورنر راج لگتا ہے یا کوئی ریلیف نہیں ملتا ہے تو اُن کو بھی اِسی طرف آنا پڑے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ جہاں تک گرفتاری سے ڈرانے کی بات ہے تو ہم نے اپنا بندوبست کر لیا ہے اور مولانا فضل الرحمان کی گرفتاری کی صورت میں متبادل قیادت کا اعلان بھی ہوگیا ہے۔

یاد رہے کہ مولانا فضل الرحمان نے پی ٹی آئی حکومت کے خلاف اکتوبر میں اسلام آباد کی جانب مارچ کرنے اور دھرنا دینے کا اعلان کر رکھا ہے۔

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *