Type to search

خبریں سیاست فيچرڈ

ڈاکٹر عامر لیاقت آصف زرداری کے قدموں میں کیوں بیٹھے؟

اکثر افراد کو نئی حکومت کے قیام کے وقت کے وہ  مناظر یاد ہونگے جب  قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران سپیکر قومی اسمبلی کے انتخاب کے دوران ڈاکٹر عامر لیاقت پہلے وزیراعظم  عمران خان کے پاس آکر نیچے بیٹھ گئےتھے اور گفتگو کرتے رہے اس کے بعد وہ سابق صدر آصف علی زرادری کے پاس گئے اور پھر نیچے بیٹھ گئے اور ان سے گفتگو کرتے رہے۔

عامر لیاقت حسین اس بارے میں وقتاً فوقتاً مختلف بیانات دیتے رہے ہیں، اُس وقت ان کا کہنا تھاکہ  وہ جس کام کیلئے آصف علی زرداری کے پاس گئے تھے وہ کام ہو گیا اور سب نے دیکھا کہ اسپیکر کی نسبت ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری کو زیادہ ووٹ ملے ہیں۔

ایک اور موقع پر انکا کہنا تھا کہ وہ  قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران پپپلز پارٹی کے شریک چئیرمین کے قدموں میں نہیں بیٹھے  بلکہ ان سے ن لیگ کے احتجاج میں شرکت نہ کرنے کی اپیل کر رہا تھا۔ 

تاہم اب انہوں نے اس متعلق ایک نیا بیان داغ دیا ہے۔ عامر لیاقت حسین نے اس بارے اب دلچسپ تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر ایک آدمی کے گھٹنوں میں اپنی حرکتوں کی وجہ سے تکلیف ہے اور وہ اٹھ نہیں سکتا تو میں اسے اٹھنے کیلئے کیسے کہوں؟  مولا علی کا قول ہے کہ قدموں میں بیٹھے ہوئے لوگ گرتے نہیں ہیں ، کرسی پر بیٹھنے والے گر جاتے ہیں۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *