Type to search

خبریں سیاست فيچرڈ

”مریم نواز بیمار ہوئیں تو انہیں بھی باہر جانے کی اجازت مل جائے گی“

وفاقی وزیر داخلہ بریگیڈیئر ریٹائرڈ اعجاز شاہ کا کہنا ہے کہ اگر مریم نواز بیمار ہوجائیں گی تو انہیں بھی باہر جانے کی اجازت مل جائے گی۔

ننکانہ صاحب میں تقریب سے خطاب کے دوران وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان جلد جانے والے نہیں، ہم نے انہیں پانی بجلی اور طبی امداد بھی دی ہے، ہم مولانا فضل الرحمان کے ساتھ اتنا اچھا سلوک کررہے ہیں کہ یہاں ان کا دل لگ گیا ہے، انہیں اتنا پیار دے رہے ہیں کہ وہ وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ بھول جائیں گے۔ ہم مولانا فضل الرحمان کو بٹھائے رکھیں گے۔ حکومت یہ پانچ سال اور اگلے پانچ سال بھی پورے کرے گی۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ عمران خان اس قسم کے آدمی نہیں کہ کسی کو ڈیل یا ڈھیل دیں، نواز شریف کو انسانی ہمدردی کی بنیاد پر بیرون ملک علاج کی اجازت دی جا رہی ہے ڈاکٹروں کے مطابق نواز شریف کی حالت تشویش ناک ہے، پاکستان میں ان کا علاج ممکن نہیں، سارے وزرا کی یہی رائے ہے کہ نواز شریف کو علاج کے لیے بیرون ملک جانا چاہئے۔

مریم نواز کے حوالے سے اعجاز شاہ نے کہا کہ مجھے تو نہیں پتا کہ مریم نواز بیمار ہیں، اللہ انہیں صحت دے وہ ٹھیک ہیں، اگر مریم نواز بیمار ہوجائیں گی تو انہیں بھی باہر جانے کی اجازت مل جائے گی۔

دوسری جانب سینئیر صحافی کاشف عباسی کا کہنا ہے کہ ن لیگ کو زیادہ مشکل ہو گی اگر نواز شریف باہر چلے جائیں اور مریم نواز پاکستان میں رہ جائیں . اب تک سیاسی پوزیشن نہ لینے کے لیے یہی کہا جا رہا تھا کہ نواز شریف بیمار ہیں ان کی تیمارداری وغیرہ،لیکن اگر نواز شریف ایک بار ملک سے باہر چلے جاتے ہیں تو اسٹیج سیٹ ہے .

ان کا کہنا تھا کہ "کنٹینر لگا ہوا ہے اور تیمارداری کا بہانہ موجود نہیں ہے.مریم نواز کا کنٹینر پر جانے کا فیصلہ طے کرے گا کہ ڈیل ہوئی یا نہیں ہوئی.کاشف عباسی نے مزید کہا کہ اگر مریم نواز کنٹینر پر چلی گئی پھر این آر او اور ڈیل کی باتیں بالکل ختم ہو جائیں گی لیکن اگر وہ کنٹینرپر نہ گئیں ان کا موبائل بھی بند رہا.اگر مریم نواز کی کوئی ٹویٹ سامنے نہیں آتی اور وہ کوئی سیاسی پوزیشن نہیں لیتی تو پھر یہ باتیں ہوں گی کہ واقعی ڈیل ہو گئی. کیونکہ مریم نواز اپنے جارحانہ بیانات کی وجہ سےمشہور ہیں اگر وہ خاموش رہیں تو پھر یہی تاثر جائے گا واقعی کوئی ڈیل ہوئی ہے۔

اس سے قبل پاکستان تحریکِ انصاف نے شریف خاندان کے ساتھ کسی بھی قسم کی ڈیل ہونے کا امکان کو مسترد کردیا ہے۔  سینیٹر فیصل جاوید نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا ہے کہ یہ ڈیل نہیں ریلیف ہے، ڈیل ایسی نہیں ہوتی ڈیل یہ ہوتی ہے کہ سارے کیس بند کر دیے جائیں، سوئس اکاونٹس، سرے محل اور دولت چھوڑ دی جائے، اور جس معاہدے کو بعد میں سعودی حکام آکر سب کے سامنے دکھا دیں. ڈیل یہ نہیں ہوتی کی کوئی بہت سخت بیمار ہے اور عدالت سے اسے ریلیف ملا ہو اور طبی بنیادوں پر اس کے سامنے کوئی رکاوٹ نہ ڈالی جائے.

 

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *