Type to search

خبریں سیاست قومی

آرمی ایکٹ ترمیمی بل 2020 ایوان میں پیش، تمام جماعتوں نے بل کے مسودے پر اتفاق کر لیا

  • 11
    Shares

آرمی ایکٹ ترمیمی بل 2020، ائیردورس ایکٹ ترمیمی بل 2020، نیوی ایکٹ ترمیمی بل 2020 ایوان میں پیش کر دیے گئے ہیں۔ تینوں بل الگ الگ پیش کیے گئے، بعد ازاں قومی اسمبلی کا اجلاس ہفتے کی صبح 11 بجے تک ملتوی کر دیا گیا۔

بل کے حوالے سے تمام جماعتوں کے رہنما اور اہم اراکین متحرک رہے، عمران خان نے پی ٹی آئی کے پارلیمانی اجلاس کی صدارت کی جبکہ بلاول بھٹو اپنے چیمبر میں مشاورت میں مصروف رہے۔

بعد ازاں قائمہ کمیٹی برائے امور پارلیمان کے اجلاس میں مختصر بحث کے بعد تمام جماعتوں نے بل کے مسودے پر اتفاق کر لیا۔

بلاول بھٹو زرداری کی آئینی روایات کی پیروی کی تجویز منظور کر لی گئی اور فیصلہ کیا گیا کہ تینوں بل پہلے قائمہ کمیٹی برائے دفاع کو بھیجے جائیں۔ کل ہونے والے اجلاس میں بل کی دونوں ایوانوں سے منظوری کا امکان ہے۔

پاکستان آرمی ایکٹ ترمیمی بل 2020 کے اہم نکات

آرمی چیف اور چیئرمین جوائنٹ چیفس کی مدتِ ملازمت 3 سال تجویز کی گئی ہے۔

ہنگامی حالات اور وسیع تر قومی مفاد میں 3 سال کی توسیع کی جا سکے گی، وزیراعظم کی ایڈوائس پر صدر مملکت تعیناتی کریں گے۔

آرمی چیف پر ملازمت کی مدت یا ریٹائرمنٹ کے قوانین کا اطلاق نہیں ہو گا۔

آرمی چیف کی تعیناتی، دوبارہ تعیناتی یا توسیع کسی عدالت میں چیلنج نہیں ہو سکے گی۔

اس قانون کے ہوتے دوسرے قوانین، ریگولیشنز مکمل بے اثر ہوں گے۔

کوئی تنازع ہوا تو بھی اطلاق ’پاکستان آرمی ایکٹ ترمیمی بل‘ کا ہو گا۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *