Type to search

بین الاقوامی خبریں دہشت گردی سیاست

القدس فورس کے نئے سربراہ جنرل اسماعیل قاآنی کا حال بھی جنرل قاسم سلیمانی جیسا ہو گا، امریکہ

  • 35
    Shares

امریکہ کے نمائندہ خصوصی برائے ایران نے دھمکی دی ہے کہ اگر القدس فورس کے نئے کمانڈر جنرل اسماعیل قاآنی نے امریکیوں کو قتل کیا تو ان کا حال بھی جنرل قاسم سلیمانی جیسا ہو گا۔

واضح رہے کہ امریکہ نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے احکامات پر عمل کرتے ہوئے جنرل قاسم سلیمانی کو 3 جنوری 2020 کو عراق میں ڈرون حملے میں قتل کیا تھا۔

ایران نے جنرل قاسم سلیمانی کا بدلہ لیتے ہوئے 8 جنوری کو عراق میں دو امریکی فوجی اڈوں کو نشانہ بنایا تھا جس میں 11 کے قریب امریکی فوجی زخمی ہوئے تھے اور فوجی کیمپوں کو شدید نقصان پہنچا تھا۔

جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت کے بعد ایران نے جنرل اسماعیل قاآنی کو القدس فورس کا نیا سربراہ مقرر کیا تھا۔ جنھوں نے اپنے پیش رو قاسم سلیمانی کی پالیسیوں کو جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

اس حوالے سے امریکی نمائندہ خصوصی برائے ایران برین ہک نے ایک عرب اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ اگر جنرل قاآنی نے امریکیوں کو قتل کرنے کی پالیسی جاری رکھی تو ان کا حال بھی جنرل قاسم سلیمانی جیسا ہو گا۔

برین ہک نے مزید کہا کہ صدر ٹرمپ نے بہت پہلے واضح کر دیا تھا کہ اگر کسی نے امریکیوں یا امریکہ کے مفادات کو نقصان پہنچایا تو اس سے سختی سے نمٹا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکی صدر کی جانب سے یہ دھمکی نہیں ہے بلکہ ایسا امریکیوں کے تحفظ کے لیے کیا جائے گا۔

امریکی نمائندہ خصوصی برائے ایران نے مزید کہا کہ میرا خیال ہے کہ ایرانی حکومت سمجھ گئی ہو گی کہ اب امریکہ پر حملہ نہیں کرنا اور ایسی حرکتوں سے باز رہنا ہے۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *