Type to search

جرم خبریں قومی

چونیاں: ٹیوب ویل میں نہانے پر زمیندار نے 22 سالہ مسیحی نوجوان کو تشدد کر کے قتل کر دیا

ٹیوب ویل میں نہانہ مسیحی نوجوان کا جرم بن گیا، زمیندار نے نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنا کر قتل کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق ضلع قصور کی تحصیل چونیاں میں ٹیوب ویل میں نہانا نوجوان کا جرم بن گیا، زمیندار نے ٹیوب ویل گندا کرنے کے الزام پر نوجوان کو تشدد کر کے قتل کر دیا۔

22 سالہ مسیحی نوجوان کے والد نے بتایا کہ بیٹا چارہ کاٹ کر ٹیوب ویل میں نہانے چلا گیا، جہاں شیر ڈوگر اور اقبال الطاف نے دیگر افراد کے ہمراہ تشدد کا نشانہ بنایا۔ بعدازاں اسے ڈیرے پر لے گئے اور ہاتھ پاوٴں باندھ کر تشدد کا نشانہ بناتے رہے۔ چار گھنٹے بعد جب متاثرہ نوجوان کے اہلخانہ کو اطلاع موصول ہوئی تو نوجوان کی حالت غیر ہو چکی تھی۔

نوجوان کے اہلخانہ جب بااثر زمیندار کے ڈیرے پر پہنچے تو تشدد کا نشانہ بننے والے نوجوان کے سر اور منہ سے خون بہہ رہا تھا۔ متوفی سلیم کو جنرل ہسپتال لیہ منتقل کیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے زندگی کی بازی ہار گیا۔

ورثا نے موقف اختیار کیا ہے کہ نوجوان کے قتل میں پولیس کا کردار بھی شامل ہے، پولیس نے سارے معاملے میں خاموشی اختیار کی ہوئی ہے اور کارروائی کرنے سے اجتناب کر رہی ہے۔ چند افرد کو کچھ دیر کے لئے حراست میں لیا گیا جنہیں بعدازاں ضمانت پر رہا کر دیا گیا۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *