Type to search

Coronavirus خبریں طب

کرونا وائرس سے بچ کر قرنطینہ میں رہنے والے مرد و خواتین اپنی فحش ویڈیوز اپلوڈ کرنے لگے

کرونا وائرس نے اس وقت بحیثیت مجموعی انسانیت کو موت کے دہانے پر لا کھڑا کیا ہے اور دنیا بھر کی رونقیں ماند پڑ چکی ہیں۔ ہر طرف تباہی کیا نقارہ بج رہا ہے۔ ملکوں کے ملک بند کر دیئے گئے ہیں انسان اپنے پیاروں کے ساتھ گھلنے ملنے سے بھی احتراز برت رہا ہے۔ ایسے میں لاکھوں افراد قرنطینہ ہوچکے ہیں اور وہ چار دیواروں میں محصور اپنی زندگی گزار رہے ہیں۔مگر نفسانی خواہشات پر شیطانی غلبہ ہے کہ اس خوفناک صورتحال میں بھی انسانی ہوس کو ہوا دیئے ہوئے ہے۔

دستیاب معلومات کے مطابق کرونا سے بچنے کے خاطر گھروں اور آئسولیشن وارڈز میں بند خواتین اور مرد اپنے جنسی اختلاط کے مناظر فحش ویب سائٹس پر اپلوڈ کر رہے ہیں۔ ان افراد نے ویڈیوز میں ماسک پہن رکھے ہیں اور ان ویڈیوز کے عنوانات کرونا وائرس سے منسوب کئے گئے ہیں ۔ 

مغربی ذرائع ابلاغ کے مطابق بدنام زمانہ پورن ویب سائٹ پورن ہب کے سرور پر پچھلے 4 دن میں 112 ایسی ویڈیوز اپلوڈ کی گئی ہیں جن میں کرونا کے شبے میں قرنطینہ کئے جانے والے افراد کے درمیان جنسی مناظر دیکھے جا سکتے ہیں ان میں ہم جنس پرست افراد کے درمیان جنسی مناظر پر مبنی ویڈیوز بھی شامل ہیں ۔

دوسری جانب ایک اور پورن ویب سائٹ  ایکس ہیمشٹرکے مطابق ان علاقوں جہاں پر کرونا کے سب سے زیادہ مریض ہیں وہاں سے ان کی ویب سائٹس پر اپلوڈنگ لاگ انز کی سب سے زیادہ درخواستیں آرہی ہیں۔

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *