Type to search

Coronavirus خبریں صحت قومی

خطرے کی گھنٹی: کرونا وائرس اب مقامی لوگوں میں پھیل رہا ہے، وزیر صحت سندھ

سندھ کی وزیر صحت عذرا فضل پیچوہو نے صوبے میں کرونا وائرس سے پہلی ہلاکت کی تصدیق کرنے کے بعد خبردار کیا ہے کہ وائرس اب مقامی افراد میں پھیل رہا ہے۔

سندھ حکومت کی جانب سے کراچی میں کرونا وائرس سے پہلی ہلاکت کی تصدیق کردی گئی ہے جس کے بعد ملک میں ہلاکتوں کی مجموعی تعداد تین ہو گئی ہے جب کہ متاثرین کی تعداد ساڑھے 4 سو سے تجاوز کر چکی ہے۔ اس ضمن میں وزیر صحت سندھ عذرا فضل پیچوہو کا کہنا ہے کہ پہلے یہ بیرون ملک سے آنے والے لوگوں کے ذریعے پھیلا لیکن اب کرونا وائرس ہمارے معاشرے میں آچکا ہے اور مقامی لوگوں کو متاثر کر رہا ہے۔

وزیر صحت سندھ نے کہا کہ کرونا وائرس اب مقامی لوگوں میں پھیل رہا ہے اس لیے ہمیں بہت زیادہ احتیاط کی ضرورت ہے، لوگ خود سے بہت زیادہ احتیاط کریں اور گھروں میں رہیں۔

سندھ حکومت کے مطابق اس وقت صوبے میں کرونا وائرس کے کُل مریضوں کی تعداد 238 ہے۔ سندھ حکومت کے حکام کا بتانا ہے کہ سکھر میں اب تک مجموعی طور پر 302 زائرین کے ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 151 کا نتیجہ مثبت اور 151 کا منفی آیا جب کہ ایک کیس کو دوبارہ ٹیسٹ کیا جا رہا ہے۔

دوسری جانب حکومت سندھ کے ترجمان مرتضی وہاب نے اپنے ویڈیو بیان میں کہا کہ لوگ 14 دن خود کو آئسولیشن میں رکھ کر اپنے اہل خانہ اور دیگر لوگوں کو اس وبا سے محفوظ رکھ سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بیرون ملک سے آنے والے ایک شخص کی لاپرواہی سے اس کی پوری فیملی کرونا وائرس کا شکار ہو گئی کیونکہ متاثرہ شخص نے اپنے سماجی رابطے منسوخ نہیں کیے تھے، محفلوں میں جاتا رہا اورمارکیٹوں میں بھی گھومتا رہا۔

مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ احتیاط نہ برتنے سے بڑا نقصان ہو سکتا ہے اسی لیے سندھ حکومت پہلے روز سے عوام کو سماجی رابطے محدود کرنے کی درخواست کر رہی ہے کیونکہ کرونا سے لڑنے کا واحد حل آئسولیشن ہی ہے۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *