Type to search

Coronavirus بین الاقوامی خبریں مذہب

مسلمان و یہودی رضاکاروں کا ایک ساتھ عبادت کر کے دنیا بھر کو منفرد پیغام

کرونا وائرس سے نمٹنے کے دوران اسرائیل کے دو میڈیکل رضاکاروں نے اپنے اپنے عقائد کے مطابق ایک ساتھ عبادت کر کے دنیا کو ایسا پیغام دیا کہ ہر طرف دونوں رضاکاروں کی تعریفیں کی جا رہی ہیں۔

امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق اسرائیل کے شہر بیر سبع میں اسرائیل کے محکمہ صحت کے ادارے میگن ڈیوڈی ایڈم کے مسلمان و یہودی رضاکار نے ایک ساتھ عبادت کر کے دنیا بھر کو ایک منفرد پیغام دیا۔ اسرائیلی محکمہ صحت کے ادارے میں طبی رضاکار عملے کی خدمات سر انجام دینے والے مسلمان پیرامیڈیکل اسٹاف ظہر ابو جاما اور یہودی پیرامیڈیکل اسٹاف اورام منتز نے دوپہر کے وقت کام سے تھوڑا سا وقفہ لے کر اپنے اپنے عقائد کے مطابق روڈ پر ہی عبادت کی اور وبا کے خاتمے کے لیے دعا بھی کی۔ دونوں رضاکاروں نے اپنے اپنے عقائد کے مطابق مختصر وقت کے دوران عبادات کیں اور اس دوران یہودی پیروکار نے یروشلم میں واقع دیوار گریہ جب کہ مسلمان پیروکار نے خانہ کعبہ کی جانب رخ کر کے عبادات کیں۔

دونوں رضاکاروں کی سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی تصاویر میں دونوں کو ایک روڈ پر ایمبولینس کو بند کر کے ایک ساتھ اپنے اپنے عقائد کے مطابق عبادت کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

 

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *