Type to search

انٹرٹینمنٹ خبریں

جب فلم کے ڈائریکڑ کو شبہ ہوا کہ مادھوری حاملہ نہ ہوجائیں

  • 2
    Shares

بالی ووڈ کے پرستاروں کی دلوں کی دھڑکن مادھوری ڈکشٹ نے سینما کو بلا شبہ نئی  جہتیں دی ہیں۔مادھوری جو کر دیں وہ ایک خبر بن جاتی ہے۔ ایسا ہی ایک معاملہ انکا بالی ووڈ ہیرو سنجے دت کے ساتھ  معاشقہ تھا جو  ہندی فلم انڈسٹری کی زندگی کا سب سے منفرد باب ہے۔ سنجے اور مادھوری اس معاشقے میں اس شدت سے متوجہ تھے کہ لوگ اسے عشق کا جنون کہا کرتے تھے۔ تاہم اب یہ بات سننے کو عجیب معلوم ہوتی ہے لیکن تب ایسا ہی تھا۔

لیکن اس سے متعلق ایک اہم معاملہ یہ بھی ہے کہ اسی معاشقے کی وجہ سے  بالی ووڈ کی اس ڈریم گرل کو ایک ایسا عجیب و غریب معاہدہ کرنا پڑا تھا جو آج تک کا بالی ووڈ کی فلم نگری میں سب سے منفرد معاہدہ تھا۔  ۔ ایک بھارتی جریدے کے مطابق 90 کی دہائی میں مادھوری اور سنجے دت سے جب بہت قریب آگئے تو وہ ہر وقت ساتھ نظر آتے۔ اور ان کے جسمانی تعلقات عام خیال تھے۔ اس وقت سنجے دت کی اہلیہ رچا شرما انہیں چھوڑ کر بیرون ملک جا چکی تھیں اور شنید تھا کہ یہ دونوں شادی بھی کر لیں۔اس تاثر کو ہٹ فلم ‘ساجن’ نے مزید گہرا کردیا۔ یہ بھی ایک عجیب بات تھہ کہ جب سنجے دت اکیلے شوٹنگ کر رہے ہوتے تو وہ سیٹ پر مادھوری سے فون پر گھنٹوں باتیں کرتے، جس کا بل  فلم کےپروڈیوسر ادا کرتے۔

اسی دور میں ڈائریکٹر سبھاش گھائی نے دونوں کو سپر ہٹ فلم ‘کھل نائیک’ میں سائن کیا۔  تاہم انہیں یہ خدشہ لاحق ہوگیا کہ فلم کی شوٹنگ کے دوران کہیں یہ دونوں ایک دوسرے سے شادی نہ کرلیں یا پھر مادھوری حاملہ نہ ہو جائیں۔

اسی خدشے کے تحت انہوں نے مادھوری ڈکشٹ سے فلم کے دوران ‘No Pregnancy’ معاہدہ کرلیا جس کے تحت فلم کی تکمیل تک مادھوری حاملہ نہیں ہو سکتی تھیں۔سبھاش گھائی اور مادھوری کے مابین یہ معاہدہ طے پانے کے بعد ہی کھل نائیک کی شوٹنگ شروع ہوئی۔ آج تک یہ معاہدہ بالی ووڈ کے عجیب و غریب معاہدوں میں سے ایک ہے۔ 

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *