Type to search

Coronavirus خبریں

بیرون ملک سے پاکستان آنے والوں کو اپنے خرچ پر ہوٹل میں 7 سے 14 روز تک قرنطینہ گزارنا پڑے گا

حکومت کی جانب سے اب بہرون ملک سے پاکستان لائے جانے والے پاکستانیوں کے لئے  قرنطینہ کی شکایت میں تبدیلی کی گئی ہے اور یہ اس بات کی طرف اشارہ بھی ہے کہ اب شاید بڑی تعداد میں بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو وطن واپس لایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے وطن واپس آنے والے پاکستانیوں کو قرنطینہ میں رکھنے کے طریقہ کار میں تبدیلی کردی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق  بیرون ملک سے آنے والے پاکستانی اب ائیرپورٹ سے فوری ہوٹلوں میں  منتقل کیے جائیں گے جہاں انہیں 48 گھنٹے کے بجائے اب 7 روز تک  رہنا ہوگا۔

ذرائع نے بتایا کہ مسافروں کو 7 دن بعد ٹیسٹ نتیجہ منفی آنے کی صورت میں گھر جانے کی اجازت ہوگی تاہم ٹیسٹ مثبت آنے پر مسافروں کومزید 14 روز ہوٹل میں ہی قرنطینہ میں رہنا ہوگا۔ جبکہ ائیرپورٹ سے ٹرانسپورٹ اور ہوٹل تک تمام خرچہ مسافروں کو خود برداشت کرنا پڑے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس سے قبل بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کا خرچہ نیشنل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کا ادارہ اٹھا رہا تھا۔یاد رہے کہ  ملک میں لاک ڈاؤن 30 اپریل تک جاری ہے تاہم خیال کیا جا رہا ہے کہ  اس دوران بیرون ممالک سے سینکڑوں  پاکستانیوں کو وطن واپس لایا جائے گا۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *