Type to search

بین الاقوامی جرم خبریں خواتین

درندہ صفت شخص کی لڑکی کیساتھ 23 روز تک مسلسل جنسی زیادتی

آسٹریلیا میں ایک درندہ صفت انسان لڑکی کو اغوا کر کے 23 دن تک جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا رہا اور اس پر ظلم و بربریت کے ایسے پہاڑ توڑے کہ سن کر دل دہل جائے۔

خبر رساں ادارے دی مرر کی رپورٹ کے مطابق 34 سالہ مجرم کا نام نکولس جان کریلے ہے جس نے لڑکی کو اغوا کر کے جنسی زیادتی اور بدترین تشدد کا نشانہ بنایا۔ نکولس نے سفاکیت کی تمام حدیں پار کرتے ہوئے لڑکی کو نا صرف جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا بلکہ اس کو آگ پر بیٹھنے پر مجبور کرتا رہا، اس کے اعضائے مخصوصہ پر کھولتا ہوا پانی ڈالتا رہا اور اسے اپنا ہی فضلہ کھانے پر مجبور کرتا رہا۔

آسٹریلوی حکام کی جانب سے لڑکی کے نام اور شناخت کو قانونی وجوہات کی بنا پر ظاہر نہیں کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق ملزم نے لڑکی پر وحشیانہ جسمانی تشدد کیا جس سے اس کے جسم کی کئی ہڈیاں ٹوٹ گئیں۔ جب پولیس نے لڑکی کو بازیاب کروایا تو اس کا 46 فیصد جسم بری طرح جلا ہوا تھا، اس کی جلد اکھڑ کر لٹکی ہوئی تھی اور چہرہ جگہ جگہ سے پھٹا ہوا تھا، جیسے کسی تیز دھار آلے سے کٹ لگائے گئے ہوں۔

پراسیکیوٹر سینڈرا کیوپینا نے عدالت میں بتایا کہ متاثرہ لڑکی کے چہرے اور جسم کے زخم اس قدر خراب ہو چکے تھے کہ ان میں کیڑے پڑ چکے تھے۔ اگر اسے چند دن اور بازیاب نہ کرایا جاتا اور ہسپتال نہ پہنچایا جاتا تو وہ اب تک مر چکی ہوتی۔

عدالت میں مقدمے کی کارروائی جاری ہے اور ماہرین قانون کے مطابق آسٹریلوی قانون کے تحت ملزم کو ممکنہ طور پر عمر قید کی سزا ہو سکتی ہے۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *