Type to search

خبریں دہشت گردی

افغان چلڈرن ہسپتال پر دہشت گردوں کا حملہ، سیکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں میں لڑائی جاری

بچوں کے ہسپتال پر دہشت گردوں کے اس حملے میں اب تک چار افراد کے ہلاک ہونے اور متعدد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔  ابھی تک یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ یہ حملہ کس کی جانب سے کیا گیا تاہم اس وقت سیکیورٹی فورسز دہشت گردوں سے لڑنے میں مصروف ہیں اور اب تک 80 کے قریب ڈاکٹرز، نرسرز اور بچوں کو ہسپتال سے نکال لیا گیا ہے۔

حملے کی زد میں کابل کا یہ بچہ ہسپتال بین الاقوامی طبی تنظیم کے تحت چلایا جاتا ہے۔ اور اس میں اس وقت غیر ملکی طبی عملے کی بڑی تعداد  موجود تھی۔ حملے کے وقت ہسپتال میں  140 کے قریب طبی عملہ کے افراد موجود تھے۔ 

یاد رہے کہ کابل میں آج ایک اور حملے میں 21 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ عینی شاہدین کے مطابق ہسپتال میں حملے کے فوری بعد انہیں دو بم دھماکے سنائی دیئے جس کے بعد بھاری فائرنگ کی آوازیں سنی جا رہی ہیں۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *