Type to search

جرم خبریں

‘ہمیں سیکس کی لت تھی’ : گوجرانوالہ میں شاپنگ سینٹر کے لیڈیزٹرائی روم میں خفیہ کیمرے لگانے والے کیا کرتے تھے؟

گوجرانوالہ میں ایک سنسنی خیز جرم کی واردات سامنے آئی ہے جس میں ٹرائی روم میں کپڑے پہن کر چیک کرتی ہوئی خواتین صارفین کی خفیہ ویڈیو بنانےکا معاملہ پیش آیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق  گوجرانوالہ کے نایاب سینٹر کے مالک عمر اسلم نے خواتین کے ملبوسات بھی رکھے ہوئے تھے اور خواتین گاہکوں کو ٹرائی روم میں کپڑے ٹرائی کرنے کی سہولت کا بتایا جاتا۔

اس ٹرائی روم میں لڑکیوں کی برہنہ حالت میں خفیہ ویڈیو بنائی جاتی جس کو  بنانے کے بعد متاثرہ خواتین کو بلیک میل کیا جاتا۔  خبر کے مطابق نایاب شاپنگ سینٹر جو کہ گوجرانوالہ کے سیٹلائٹ ٹاؤن میں واقع ہے،وہاں خفیہ کیمر نصب کیے گئے تھے۔ ویڈیوبنانےکے بعد پیسوں کی ڈیمانڈ کی جاتی تھی۔ کپڑے چیک کرنے کے لئے اوپر والے پورشن پر بھیجتے تھے جہاں پر cctvکیمرے نصب تھے۔ پیسے دینے سے انکار کرنے والی لڑکیوں کو ویڈیو وائرل کرنے کی دھمکیاں دیتے تھے۔

سیٹلائٹ ٹاؤن میں رہائشی لڑکی سے ایک لاکھ بیس ہزار روپے کی ڈیمانڈ کی۔  جب اسنے اپنے اہل خانہ کو مدد کے لئے اعتماد میں لیا تو انہوں نے متعلقہ تھانے میں درخواست دی جس پر پولیس نے ملزمان کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا۔

پولیس نے ملزم بیٹے کے ساتھ اسکے باپ کو بھی اسی الزام کے تحت گرفتار کیا ہے۔ ملزموں نے ابتدائی تفتیش کے دوران کہا ہے کہ انہیں سیکس کی لت ہے جسے پورا کرنے کے لئے وہ برہنہ لڑکیوں کی ویڈیو بنا کر ان سے اپنی تسکین کا سامان کرتے تھے۔ 

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *