Type to search

جرم خبریں خواتین قومی مذہب

لاہور: شادی سے انکار پر لڑکے کا لڑکی پر تشدد، برہنہ کر کے سڑک پر گھماتا رہا، سوشل میڈیا پر مذہبی رنگ دینے کی کوشش

لاہور کے علاقے گلبرگ میں افسوناک واقعہ پیش آیا، جہاں وسیم مسیح نامی لڑکے نے شادی سے انکار پر ام رباب نامی لڑکی کو تشدد کا نشانہ بنایا اور برہنہ کر کے سڑک پر گھماتا رہا، اس جرم میں وسیم مسیح کے ہمراہ مزید 9 افراد شامل تھے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے علاقے گلبرگ میں ام رباب نامی لڑکی کے گھر پر وسیم مسیح نامی لڑکے نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ حملہ کیا اور شادی سے انکار پر لڑکی کو تشدد کا نشانہ بنایا اور برہنہ کر کے سڑک پر گھماتا رہا۔

واقعے کی ایف آئی آر لڑکی کی مدعیت میں گلبرگ کے تھانہ غالب مارکیٹ میں درج کی گئی، جس کے بعد پولیس نے کارروائی کا آغاز کر دیا ہے۔

ایف آئی آر میں درج معلومات کے مطابق وسیم مسیح ولد سلیم مسیح، رانجھا مسیح ولد سلیم مسیح، نعمان عرف نومی، سکندر مسیح اور 6 دیگر افراد نے 5 جولائی کو رات ساڑھے دس بجے کے قریب ام رباب انجم ولد ذوالفقار انجم کے گھر پر حملہ کیا۔ اور لڑکی کے والدین کی غیر موجودگی میں گھر میں گھس کر ملازم راشد اور لڑکی کے رشتے دار ندیم منشا پر تشدد کیا اور بعد ازاں ام رباب کو تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے گھر سے باہر لے گئے۔

ایف آئی آر کے مطابق مجرمان نے لڑکی کو سڑک پر برہنہ کیا اور پھر اسلحے کے زور پر اسے سڑک پر گھماتے رہے۔ اہل علاقہ نے بیچ بچاؤ کروایا اور لڑکی کو وسیم مسیح اور اس کے ساتھیوں سے چھڑوایا۔

لڑکی ام رباب نے ایف آئی آر میں مؤقف اپنایا ہے کہ ملزم وسیم مسیح مجھ سے شادی کرنا چاہتا ہے، مذہب اور ذات برادری الگ ہونے پر میں نے انکار کیا جس وجہ سے ملزم نے مجھے اس طرح سرعام رسوا کیا، وسیم مسیح ریکارڈ یافتہ مجرم ہے۔

پولیس نے واقعے کی ایف آئی آر درج کر کے مقدمے کی تفتیش شروع کر دی ہے جبکہ دوسری جانب سوشل میڈیا پر اس واقعے کو مذہبی رنگ دینے کی کوشش کی جا رہی ہے جس سے ملک میں انتشار کا خطرہ پیدا ہو رہا ہے۔

 

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *