Type to search

بڑی خبر جرم خبریں

نوشہرو فیروز: امام مسجد 12 سالہ بچے سے مسجد میں جنسی زیادتی کرتے ہوئے سی سی ٹی وی ویڈیو منظر عام پر آگئی

کوئی دن گزرتا نہیں کہ مساجد اور مدرسوں میں بچوں کے ساتھ زیادتتی کا نیا واقعہ سامنے آجاتا ہے۔  تاہم اچنبھے کی بات یہ ہے کہ قومی سطح پر اسے اس طرح سے مسجد و منبر کی توہین نہیں سمجھا جاتا جیسا کہ کسی فلمی اداکار کے چند سینکڈ کے کلپ کو۔

اب تازہ ترین واقعہ میں سندھ کے شہر نوشہرو فیروز کاندیارو میں ایک امام مسجد نے اپنے  پاس پڑھنے والے 12 سالہ طالب علم القرآن بچے کو  انہی صفوں پر جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا ہے جہاں اللہ کی عبادت کی جاتی ہے۔  اسکی شناخت قاری محمد عباس کے نام سے ہوئی ہے۔ 

اس اندوہناک واقعے کو مسجد میں لگے سی سی ٹی وی کیمرے نے محفوظ کرلیا جس کی فوٹیج  سوشل میڈیا پر شئیر ہوگئی ہے۔

اس حوالے سے سوشل میڈیا پر غم و غصے کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ اورمجرم کو کیفر کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔

یاد رہے کہ کچھ دن قبل صبا قمر اور بلال سعید کے مسجد وزیر خان میں ایک کلپ منظر عام پر آنے کے بعد اسے مسجد کی توہین قرار دیا گیا تھا اور اس پر سخت تنقید کی گئی تھی۔

اس حوالے سے گلالئی اسماعیل نےلکھا کہ وہ طبقہ جن کا نکاح ٹوٹ ہوگیا تھا کیونکہ صبا قمر نے فلم کی شوٹنگ کر لی تھی مسجد میں، کیا اب وہ طبقہ غصے سے تپ رہا ہے؟ کیا اس ملا پر جو نماز کی جگہ پر بچے کے ساتھ ذیادتی کر رہا تھا کو بھی توہین مذہب سمجھ رہا ہے یا اب انھیں سانپ سونگ گیا ہے؟

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *