Type to search

انسانی حقوق جرم خبریں خواتین قومی

ہندو برادری سے تعلق رکھنے والی لڑکی کا اغوا، پولیس کا مقدمہ درج کرنے سے انکار

سندھ پولیس کا ہندو برادری سے تعلق رکھنے والی لڑکی سمرن کے اغوا کا مقدمہ درج کرنے سے انکار، لڑکی کے بھائیوں نے ہاتھ جوڑ کر اعلیٰ حکام سے انصاف کی اپیل کی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کے صوبہ سندھ کے ضلع گھوٹکی کے علاقے میر پور ماتھیلو سے ہندو برادری کی سمرن نامی لڑکی کا اغوا ہوا، جب لواحقین نے اندراج مقدمہ کے لیے پولیس سے رابطہ کیا تو پولیس نے مقدمہ درج کرنے سے انکار کر دیا۔

لڑکی کے بھائی سنیل کمار نے ایک ویڈیو میں اعلیٰ حکام سے اپنی بہن کی بازیابی کے درخواست اور انصاف کی اپیل کی ہے۔

سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹویٹر پر وائس آف پاکستان مینارٹیز کے نام سے موجود ایک اکاؤنٹ سے اغوا ہونے والی لڑکی سمرن کے بھائی سنیل کمار کی ویڈیو اپ لوڈ کی گئی، جس میں وہ انصاف کی اپیل کر رہے ہیں۔

ویڈیو کے ساتھ لکھا ہے کہ جب قانون ہی مجرموں کا ساتھ دے تو انصاف کی توقع کیسے کی جا سکتی ہے؟

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *