Type to search

بین الاقوامی خبریں ورثہ

اسرائیل میں عباسی دور کے انتہائی نایاب سونے کے سکوں کا خزانہ دریافت

  • 1
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
    1
    Share

اسرائیلی آثار قدیمہ کے ماہرین نے اعلان کیا ہے کہ انہوں نے ابتدائی اسلامی دور کے سونے کے سکوں کا خزانہ دریافت کیا ہے۔ سونے کے یہ انتہائی نایاب سکے گیارہ سو برس قبل عباسی دور کے ہیں۔

اسرائیلی ماہرین آثار قدیمہ کے مطابق انہیں یہ خزانہ وسطی شہر یفنہ کے قریب کھدائی کرتے ہوئے ملا ہے۔ اس شہر کا بائبل میں یبنہ اور یبنی ایل کے نام سے ذکر ہوا ہے۔ یونانیوں اور رومیوں کے زمانے میں یہ جمنیہ کے نام سے مشہور تھا۔

اسرائیل کے ماہرین آثار قدیمہ و نوادرات لیئٹ نڈاو ژیو اور ایلی حدید کی طرف سے جاری ہونے والے مشترکہ بیان کے مطابق یہ خزانہ چار سو پچیس سونے کے سکوں پر مشتمل ہے اور ایسا بہت ہی کم ہوتا ہے کہ اتنے نایاب سکے دریافت ہوں۔ ماہرین کو وہاں سے سینکڑوں سونے کی کتریں بھی ملی ہیں اور اندازہ ہے کہ انہیں بھی سکوں کی طرح ادائیگی کے لیے استعمال کیا جاتا تھا۔

سکوں اور نوادرات کے ماہر رابرٹ کول کا کہنا ہے کہ ابتدائی طور پر یہ سکے نوویں صدی کے لگتے ہیں، جب عباسی خلافت اپنے عروج پر تھی اور اس کی حکمرانی نہ صرف مشرق وسطیٰ بلکہ شمالی افریقہ تک قائم تھی۔

رابرٹ کول کے مطابق اس دریافت سے عباسیوں کے اس دور سے متعلق زیادہ معلومات ملیں گی، جس کے بارے میں ہم بہت کم جانتے ہیں۔ یہ دریافت اسرائیل میں قدیم سکوں کی سب سے بڑی دریافتوں میں سے ایک ہے۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *