Type to search

خبریں قومی میڈیا

عاصم باجوہ کے اثاثہ جات پر خبر: اے آر وائے نے احمد نورانی کو ‘غدار’ قرار دے دیا

 

تحقیقاتی صحافی احمد نورانی نے جب سے جنرل ریٹائرڈ سلیم باجوہ کے اثاثوں سے متعلق خبر دینے کے بعد سے شدید تنقید کی زد میں ہیں اور اب انکے خلاف ایک باقاعدہ مہم شروع  ہو گئی ہے اور اس میں اے آر وائی چینل بھی پیش پیش ہے۔ 

تازہ ترین پیش رفت میں اے آر وائی نے احمد نورانی کو غدار اور بھارتی ایجنٹ قرار دے دیا ہے۔ احمد نورانی نے اس حوالے سے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایک نیوزچینل نےآج میری تصویریں چلاچلاکرمجھےغدار اور بھارتی ایجنٹ کہہ کہہ کرکوشش کی کہ کوئی مجھےجان سےماردے, اسکےبعدماردینےکی دھمکیوں کاسلسلہ شروع ہوا. پورے #پاکستان میں کسی ایک صحافی, کسی ایک صحافتی تنظیم یہاں تک کہ اسلام آباد پریس کلب تک کوتوفیق نہ ہوئی کہ ایک سطر کی مذمت کردے.

دیکھا جا سکتا ہے کہ احمد نورانی کے اس ٹویٹ کے جواب میں بھی اسی منافرت پر مبنی ٹویٹس کی گئیں اور انہیں جان سے مارنے کی دھمکیاں اور پھانسی پر چڑھانے کے مطالبے بھی کئے گئے ہیں۔

احمد نورانی کے مضمون کے مطابق عاصم باجوہ کے بھائیوں، اہلیہ اور بچوں کی چار ممالک میں 99 کمپنیاں، 130 سے زائد فعال فرنچائر ریسٹورنٹس اور 13 کمرشل جائیدادیں ہیں، جن میں سے امریکہ میں دو شاپنگ مالز بھی ہیں۔ حمد نورانی کے الزامات کے مطابق عاصم باجوہ نے اپنے اثاثہ جات ظاہر کرتے ہوئے لکھا تھا کہ ان کی زوجہ کے بیرونِ ملک کوئی اثاثہ جات نہیں ہیں مگر امریکی حکومت کی سرکاری دستاویزات کے مطابق ’عاصم باجوہ کی اہلیہ فرخ زیبا پاکستان سے باہر (امریکہ میں) تیرہ کمرشل جائیدادیں، جن میں دو شاپنگ سنٹر بھی شامل ہیں، کی مشترکہ مالک ہیں اور تین ممالک میں 82 کمپنیوں میں ان کے سرمائے کی کل مالیت تقریباً چالیس ملین ڈالر ہے جس کی وہ عاصم باجوہ کے بھائیوں کے ساتھ برابر کی مالکن ہیں۔

واضح رہے کہ کہ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے اس خبر کو مکمل طور پر بے بنیاد قرار دیتے ہوئے رد کردیا ہے۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *