Type to search

بین الاقوامی خبریں

افغان طالبان کے پہلے پی ایچ ڈی ڈاکٹر اور ترجمان: ڈاکٹر محمد نعیم

افغان طالبان نے قطر میں اپنے سیاسی دفتر کی ترجمانی کے لیے ایک ایسے شخص کا انتخاب کیا ہے جنہوں نے انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی، اسلام آباد سے پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کر رکھی ہے۔

ڈاکٹر محمد نعیم وردک کو حال ہی میں طالبان کی مذاکراتی ٹیم میں تبدیلیوں کے بعد سہیل شاہین کی جگہ ترجمان مقرر کیا گیا ہے، اس سے پہلے بھی وہ قطر سیاسی دفتر کا حصہ رہے ہیں۔ بعض افغان ذرائع کا کہنا ہے کہ سہیل شاہین کو متنازع ٹویٹ کی وجہ سے ان کے عہدے سے ہٹایا گیا تاہم طالبان نے تاحال اس ضمن میں کوئی وضاحت جاری نہیں کی۔

ڈاکٹر محمد نعیم کا تعلق بنیادی طورپر افغان صوبہ وردک کے ضلع چک سے بتایا جاتا ہے۔ انہوں نے اپنی ابتدائی تعلیم گاؤں چک کے ایک مقامی مدرسے سے حاصل کی، جس کے بعد انہوں نے ننگرہار یونیورسٹی جلال آباد میں داخلہ لیا اور بی اے کی سند حاصل کی۔ 2008 میں نعیم وردک اعلیٰ تعلیم کی حصول کے لیے پاکستان آئے اور اسلام آباد کی بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی میں داخلہ لے لیا، جہاں سے انہوں نے دوسال کے بعد عربی زبان میں ماسٹر کی ڈگری حاصل کی۔


اس بارے میں مزید جاننے کے لئے انڈیپنڈنٹ اردو دیکھیے۔

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *