Type to search

حکومت خبریں سیاست

ریلوے اراضی کیس: سعد رفیق پر لگایا الزام ثابت نا ہو سکا، نیب نے کیس واپس لے لیا

پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنماء خواجہ سعد رفیق کے خلاف نیب انکوائری بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ سفارشات حتمی منظوری کیلئے چئیرمین نیب کو بھجوا دی گئی ہیں۔

نیب کے مطابق خواجہ سعد رفیق پر ریلوے اراضی چند من پسند افراد کو لیز پر دینے کا الزام تھا۔ انکے خلاف شکایات تھیں کہ انہوں نے والٹن روڈ لاہوراور یو ای ٹی اراضی من پسند افراد کو 33 سال کیلئے ٹھیکے ہر دی تھی۔ کہا گیا تھا کہ انہوں نے ریڈمکو کمپنی کی مدد سے من پسند افراد کو زمین الاٹ کرائیں۔

نیب کے مطابق انکوائری کے بعد یہ بات سامنے آئی ہے کہ سعد رفیق نے جن کو زمین دی تھی انہوں نے سب سے زیادہ بولی لگائی تھی۔ لہذا سعد رفیق پر لگائے گئے الزامات ثابت نہیں ہوتے۔ خواجہ سعد رفیق پر یہ بھی الزام تھا کہ مسلم لیگی رہنماء نے بطور وزیر ریلوے، ریلوے کی طرف سے پاکستان کے مختلف شہروں میں 12 پلاٹ آئل کمپنیوں کو دئیے۔

یاد رہے کہ نیب نے اس کیس میں کئی بار سعد رفیق کو گرفتار کیا اور وہ جیل بھی رہے تاہم اب نیب نے انکا یہ کیس خارج کر دیا ہے۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *