Type to search

احتجاج حکومت خبریں

پی ایم ایس آفیسرز ایسوسی ایشن کا آج سے پٹیاں باندھ کر قلم چھوڑ احتجاج کا اعلان

لاہور کے ایک مقامی ہوٹل میئں پروونشل مینجمنٹ سروسز کے افسران نے شرکت کی ۔ اجلاس میں ایک ہزار سے زائد پنجاب کے پی ایم ایس افسران بحثیت مجموعی قرارداد منظور کی جس میں وفاقی و صوبائی حکومتیں سے مندرجہ ذیل مطالبات کئے گئے۔

1. ایس آر او2020 (1) 1046, ایس آر او 88 ,89 اور سی ایس پی رولز 1954 کے غیر آئینی صوبائی سب کیڈرز اور شقوں کو ختم کریں اور صوبائی اسمبلی، کابینہ اور وزراء اعلیٰ کے آئینی اختیارات بابت صوبائی پوسٹس بحال کریں۔

2. صوبائی پوسٹس بابت آئینی فیصلہ ہونے تک ڈی ایم جی کے اپنے رولز کے مطابق ڈی ایم جی افسران کو پنجاب صوبائی سب کیڈر کی 115 پوسٹس تک محدود کیا جائے اور رول نمبر 7.1 لگا کر ڈی ایم جی کو 57 پوسٹس دی جائیں اور باقی 650 صوبائی پوسٹس سے انکا قبضہ چھڑوایا جائے۔

3. پی ایم ایس افسران صوبائی وزیرِ اعلیٰ پنجاب محترم عثمان بزدار صاحب اور صوبائی کابینہ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ پی ایم ایس افسران پنجاب سے تحریر شدہ وعدوں پر عمل کروایا جائے اور سول سروس کے بحران کو ختم کرنے کے لیے ایس اینڈ جی اے ڈی کو ایک باقاعدہ منسٹر کے زریعے چلایا جائے۔

پی ایم ایس آفیسرز ایسوسی ایشن پنجاب نے مطالبات کی عملداری تک سوموار اور جمعہ کے دن کالی پٹی باندھ کر قلم چھوڑ ہڑتال کا اعلان کر دیا ہے۔ افسران نے ڈی ایم جی کی اجارہ داری کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اسے ختم کرنے کا مطالبہ کیا۔

 

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *