Type to search

بین الاقوامی خبریں دہشت گردی

اسامہ بن لادن کو ختم کرنے کے لیئے ایبٹ آباد آپریشن میں اسرائیلی انٹیلیجنس بھی شامل تھی: سابق سربراہ سی آئی اے

 اوباما دور میں امریکی خفیہ  ایجنسی سی آئی اے  کے سربراہ رہنے والے  جان بریینن نے دعویٰ کیا ہےکہ القاعدہ کے رہنما اسامہ بن لادن کے قتل میں اسرائیل سے ملنے والی معلومات بھی استعمال کی گئیں۔

اسرائیلی اخبار کو دیےگئے ایک انٹرویو میں جان برینن کاکہنا تھاکہ اسامہ بن لادن کا خاتمہ امریکی آپریشن تھا تاہم اس آپریشن میں اسرائیل کی انٹیلی جنس معلومات بھی شامل تھیں۔

اسرائیلی وزیراعظم  نیتن یاہو کے حوالے سے جان برینن کاکہنا تھاکہ انہوں نے  اسرائیلی سیاست کو نیا رخ دیا، نیتن یاہو  بااصول، بااخلاق شخص نہیں تاہم  چالاک اور موقع پرست سیاستدان ہیں۔

جان برینن کاکہنا تھاکہ اسرائیلی وزیراعظم کو اگر فلسطین کے دو ریاستی حل میں اپنا مفاد نظر آتا تو وہ اس پر اب تک عمل پیرا بھی ہو چکے ہوتے۔

ان کا کہنا تھا کہ نیتن یاہو نے اسرائیلی آبادکاری کا منصوبہ بھی اسرائیل کی دائیں بازو کی سیاسی جماعتوں  کی حمایت حاصل کرنے کے لیے بنایا اور اس منصوبے کو امارات اور بحرین سے تعلقات قائم کرنے کے لیے بھی استعمال کیا۔

 اسامہ بن لادن  کو 2011 کو یکم اور دو مئی کی درمیانی شب  پاکستان  کے شہر ایبٹ آباد میں امریکی افواج کے خفیہ آپریشن کے دوران  قتل کیا گیا تھا۔ اس حوالے سے پاکستان کی افواج اور حکومت کو اندرونی اور بیرونی سطح پر سخت ہزیمت اٹھانی پڑی تھی۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *