Type to search

بڑی خبر حکومت خبریں سیاست

قرق شدہ روزیویلٹ ہوٹل کو مالی مدد دینے کے لیئے پی آئی اے انتظامیہ نے 20 ارب کے بعد 6 ارب روپے مزید مانگ لیئے

پاکستان ائیر لائنز کی ملکیت روزیویلٹ ہوٹل کو مالی طور پر سہارا دینے کے لیئے 20 ارب  کی حکومتی ادائگی کے بعد پانچ ماہ کے اندر اندر35.57 ملین ڈالر یعنی تقریباً 6ارب تک کی رقم مانگ لی گئی ہے۔  اس مطالبے کی سمری کابینہ کی ای سی سی میں وزارت ایویشن کی جانب سے پیش کی گئی تھی۔

یاد رہے کہ روزیویلٹ ہوٹل  پی آئی اے کا ملکیتی ہوٹل ہے جو کہ منہیٹین نیویارک میں واقع ہے۔ یہ ہوٹل برٹش ورجن آئی لینڈ کی عدالت نے  پی آئی اے کے خلاف ایک کیس میں لف کر کے قرق کر رکھا ہے۔

یہ ہوٹل اس سے پہلے بھی خسارے میں جا رہا تھا جس کے حوالے سے نجکاری کا معاملہ بھی زیر غور تھا۔ اس حوالے سے ایک کیس نیب کی جانب سے بھی زیر تفتیش ہے جس پر ابھی تک کوئی پیش رفت نہیں ہوسکی۔

یا رہے کہ روزیویلٹ ہوٹل آپریشنل نہیں ہے۔ تاہم 142 ملین ڈالر جو کہ ستمبر میں ہوٹل کے مالی معاملات کو سنبھالنے کے لیئے دیئے وہ کہاں خرچ ہوئے ہیں اس بارے میں ابھی کچھ واضح نہیں ہے۔

اس حوالے سے سینیر صحافی ابصار عالم  نے ٹویٹ کرتے ہوئے سوال کیا ہے کہ ریکوڈک کیس میں اٹیچ ہونے کی وجہ سے فی الحال اس ہوٹل میں کُچھ نہیں ہو سکتا۔پھر یہ 26 ارب کہاں گئے؟ نیب نے جو کیس اس پر بنایا ہوا ہے اُس پر کارروائی کیوں نہیں ہو رہی؟ کس کس لاڈلے کو بچایا جا رہا ہے؟
جہاز کی قسط کی ادائیگی کی نہیں، خوفناک وباء سے 22 کروڑ عوام کو بچانے کے لیے 300روپے کی ویکسین خرید نے کے پیسے نہیں۔۔۔
لیکن پاکستان کو حلوائی کی دُکان سمجھ کر روزانہ اربوں روپوں کی فاتحہ پڑی جا رہی ہے۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *