Type to search

انسانی حقوق جمہوریت حکومت ریاست ویڈیوز

خواتین پر لگنے والی پابندیوں پر ایلیا زہرا کی بشریٰ گوہر کیساتھ گفتگو

باچاخان یونیورسٹی کے وائس چانسلر کے پاس اور کوئی کام نہیں ہے کہ وہ اس پر حکم دے کہ سٹوڈنٹس کونسے کپڑے پہنے اور نہ پہنے، ایک یونیورسٹی کے وائس چانسلر کا یہ کام نہیں ہے کہ خواتین کیا پہنیں گی اور نہیں پہنیں گی میں اس کی مذمت کرتی ہوں، بشریٰ گوہر
 
یونیورسٹی آف پشاور کے پاس پیسے ہی نہیں ہے کہ وہ اپنے ملازموں کی تنخواہیں دے سکیں، مجھے تو لگتا ہے کہ باچاخان یونیورسٹی کے وائس چانسلر نے عبایا کا کاروبار کررکھا ہے، ایسے وائس چانسلر کو فوری طور پر ہٹا دینا چاہیے، بشریٰ گوہر
 
باچا خان نے خواتین کے برابری کے حقوق کیلیے جدوجہد کی ان کے نام سے منسوب باچاخان یونیورسٹی میں طلبہ کے لباس پر پابندی لگائی جارہی ہے اگر باچاخان آج زندہ ہوتے تو وہ ضرور اس کی مذمت کرتے، ایلیا زہرا
Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *