Type to search

خبریں سیاست

حکومت تحریک لبیک پر عائد پابندی ہٹائے ورنہ پی ٹی آئی لاہور کا بڑا گروپ پارٹی چھوڑ دے گا: ایم پی اے نذیر چوہان

  • 18
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
    18
    Shares

پی ٹی آئی کے لاہور سے رکن قومی اسمبلی نذیر احمد چوہان نے  وزیر اعظم اور انکی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ٹی ایل پی کے کارکنان کے خلاف فوری طور پر مقدمے واپس لیتے ہوئے جماعت پر سے پابندی ہٹائی جائے۔

انہوں نے اے آر وائی کے پروگرام اینکر کاشف عباسی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر تحریک لبیک پر سے پابندی نہیں ہٹائی جاتی تو وہ  پی ٹی آئی لاہور کے دیگر ساتھیوں سے سمیت  بڑی تعداد میں پارٹی چھوڑ دیں گے۔

یاد رہے کہ حکومت پاکستان نے تحریک لبیک پاکستان(ٹی ایل پی) کو کالعدم قرار دے دیا ہے اور وزارت داخلہ نے پر پابندی کا باضابطہ نوٹیفکیشن بھی جاری کیا تھا۔

وزارت داخلہ سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق وفاقی حکومت کے پاس یہ ماننے کے لیے مناسب  شواہد موجود ہیں کہ تحریک لبیک پاکستان دہشت گردی میں ملوث ہے اور انہوں نے ایسے کام انجام دیے جس سے ملک کے امن اور سیکیورٹی کو خطرات لاحق ہو گئے۔

انہوں نے عوام کو اشتعال دلاتے ملک میں انارکی کی صورتحال پیدا کی جس کے نتیجے میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں کو نقصان پہنچا اور ان کی موت واقع ہوئی۔اعلامیے کے مطابق مشتعل افراد نے معصوم عوام کو بھی نقصان پہنچایا، بڑے پمانے پر رکاوٹیں کھڑی کیں، دھمکی آمیز رویہ اپنایا اور نفرت کو فروغ دینے کے ساتھ ساتھ گاڑیوں سمیت سرکاری اور عوامی املاک کو نقصان پہنچایا۔وزارت داخلہ کے مطابق مشتعل افراد نے ہسپتال کو ضروری اشیا کی ترسیل بھی روک دی اور عوام اور حکومت کو دھمکیاں دیں جس سے معاشرے میں خوف و ہراس اور عدم استحکام کی فضا پیدا ہو گئی۔

جبکہ اس حوالے سے یہ بھی اہم ہے کہ حکومت نے تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) کو کالعدم قرار دیے جانے کے بعد تنظیم کے اثاثے منجمد کرنے کی کارروائی کا آغاز بھی کر دیا ہے۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ تحریک لبیک کے مرکزی عہدیداروں کے شناختی کارڈ اور پاسپورٹ بھی بلاک کیے جا رہے ہیں

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *