Type to search

خبریں

’ملک کا سارا قرضہ اتار سکتا ہوں شرط یہ ہے کہ اقتدار میرے حوالے کیا جائے‘ وقار ذکا کے بیان پر سوشل میڈیا پر دلچسپ تبصرے

  • 34
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
    34
    Shares

ریالٹی شو ’ لونگ ود دی ایج‘ کے میزبان اور اپنے دلچسپ خیالات اور بیانات سے خبروں میں سرگرم رہنے والے شوبز کردار ’وقار ذکا‘ نے گزشتہ روز اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ایک ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ کرپٹو کرنسی کے ذریعے ملک کا سارا قرضہ اتار سکتے ہیں مگر اس کے لئے شرط یہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان اقتدار چھوڑ کر ان کے حوالے کر دیں۔

اسی ٹویٹ میں انہوں نے حکومتی جماعت تحریک انصاف کے سپورٹرز سے بھی مدد مانگ لی علاوہ ازیں انہوں نے تمام جماعتوں کو چیلنج کرتے ہوئے کہا کہ اس حل کے علاوہ ان کے پاس کوئی متبادل ہے تو پیش کریں۔

تاہم ان کے اس بیان پر سوشل میڈیا پر دلچسپ تبصرے جاری ہیں۔ ٹوئٹر صارفین نے ان کی اس ٹویٹ پر رائے دیتے ہوئے اسے انتہائی مضحکہ خیز حل قرار دیا ہے تاہم چند ایک لوگوں نے ان کی رائے سے اتفاق کیا جن کے بارے کہا جارہا ہے کہ وہ تمام پیڈ ٹرولز ہیں یا میٹرک اور انٹر کے طلبہ ہیں جن کے امتحانات کو ملتوی کرنے میں وقار ذکا نے انکی مہم میں حصہ لیا تھا۔

ٹوئٹر صارف عمیر الاوی نے لکھا کہ آپ کے بطور وزیراعظم قرضہ فری پاکستان میں رہنے کی بجائے وہ عمران خان کے ایک ڈیفالٹ پاکستان میں رہنا پسند کریں گے۔

ایک اور ٹوئٹر صارف سحر نے لکھا کہ آج ٹوئٹر بہت زیادہ بورنگ تھا پھر وقار ذکا نے لطیفہ سنا دیا۔ ’مجھے ملک چلانے دیں‘ میرا فیورٹ پارٹ تھا۔

 

ایک اور سوشل میڈیا صارف نے وقار ذکا کی ٹویٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ انہیں اس طرح کی خود اعتمادی چاہیئے۔

ایک ٹوئٹر صارف نے کہا کہ انہوں نے وقار ذکا کے ساتھ کرپٹو کا کام 500 امریکی ڈالرز سے شروع کیا جو اب 2000 ڈالر تک پہنچ چکا ہے۔ صارف وزیراعظم عمران خان سے اپیل کرتے ہوئے لکھا کہ وقار بھائی کو ’سیریس‘ لیا جائے۔

یاد رہے کہ وقار ذکا نے سال کے آغاز میں الیکشن کمیشن میں اپنی نئی سیاسی جماعت بنانے کے لئے درخواست جمع کروائی۔ اطلاعات کے مطابق اس پارٹی کا نام ’ٹیکنالوجی موومنٹ پاکستان‘ رکھا گیا ہے اور اس کے بانی اور چئیرمین وقار ذکا ہیں۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *