Type to search

خبریں

37 کلو چرس اور اسلحے کیساتھ گرفتار ملزمان کا ضمانت پر جشن، جلوس اور ہوائی فائرنگ

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اینٹی نارکوٹکس فورس کے ہاتھوں 8 اپریل کو 37 کلو سے زائد چرس اور اسلحہ کے ہمراہ گرفتار منشیات فروش سرفراز جدون اور اس کا ساتھی عرفان عرف چشمہ رہا ہوکر اپنے گھر شیریں جناح کالونی پہنچ گیا جب کہ ملزم کو جیل سے گھر تک جلوس کی صورت میں لایا گیا۔

پولیس کے مطابق منشیات فروش سرفراز جدون کو اینٹی نارکوٹکس تھانہ کلفٹن کے ایس ایچ او انسپکٹر واجد حسین نے 8 اپریل کو شام تقریباً ساڑھے 4  بجے مکان نمبر سی 41 بلاک ون کلفٹن شیریں جناح کالونی پر چھاپہ مار کر گھر کے کمرے سے ملزم سرفراز جدودن اور اس کے ساتھی عرفان اللہ عرچ چشمہ کو گرفتار کیا جبکہ ملزمان کی نشاندہی پر گھر کے ایک کونے میں سفید نائیلون کے دو بوروں سے مجموعی طور پر 37 کلو 200 گرام چرس برآمد کی گئی۔

پولیس کے مطابق گھر میں تلاشی کے دوران پلنگ کی نیچے سے  رائفل 222 بور نمبرAB-0560 ایک رائفل AK47 نمبر MA-3494 اور پستول نائن ایم ایم نمبر 03667 برآمد کیے گئے، گرفتار ملزمان سے برآمد کیے گئے اسلحہ کے لائسنس کے بارے میں معلوم کیا گیا تو انھوں نے لائسنس نہ ہونے کے بارے میں بتایا۔

گرفتار ملزم سرفراز جدون کی تلاشی کے دوران ایک اس کے اپنے نام کا نادرا کا شناختی کارڈ ، ممبر شب چیمبر آف کامرس کا کارڈ ، نجی بینک کا اے ٹی ایم کارڈ ، ڈرائیونگ لائسنس اور ایک ہزار 500 روپے جبکہ عرفان اللہ کی تلاشی کے دوران تقریباً مذکورہ سامان برآمد کیا گیا۔

موقع پر موجود 5 پولیس افسران و اہلکاروں کے علاوہ علاقے کے 7 افرادکو گواہ بناتے ہوئے برآمد کیے جانے والے سامان کی فہرست مرتب کر کے مذکورہ 12 افراد کو گواہ بنوا کر دستخط کرائے گئے اور برآمد کیا جانے والا سامان سفید رنگ کے تھیلوں میں ڈال کر سیل کر دیا ، ملزمان کو اے این ایف تھانہ کلفٹن لا کر ملزمان کے خلاف انسداد منشیات ایکٹ اور اسلحہ ایکٹ کے تحت مقدمہ الزام نمبر 18/2021 درج کر لیا گیا تھا۔

ذرائع نے بتایا کہ ملزم نے انتہائی زیادہ فیس دیکر اے این ایف کے مقدمات کے ماہر وکیل کو اپنا کیس لڑنے کے لیے دیا جس پر ملزم کی تقریباً ایک ماہ میں ضمانت منظور ہوگئی، ملزم کی رہائی پر اس کا انتہائی والہانہ استقبال کیا گیا۔

ملزم کی رہائی پر جیل سے گھر تک قیمتی گاڑیوں کا جلوس نکالا گیا، روزہ افطار کے بعد ملزم کی رہائی کی خوشی میں شدید فائرنگ کی گئی اور آتش بازی کا مظاہرہ بھی کیا گیا ، واقعے کے بارے بوٹ بیسن پولیس سے معلوم کیا گیا تو پولیس نے فائرنگ اور آتش بازی کے حوالے سے لاعلمی کا اظہار کیا گیا۔

Tags:

You Might also Like

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *