Type to search

خبریں

شادی سے متعلق بیٹی کے بیان کو سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا، والد ملالہ

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

نوبیل انعام یافتہ سماجی کارکن ملالہ یوسف زئی کے والد ضیا الدین یوسف زئی نے کہا ہے کہ شادی سے متعلق ان کی بیٹی کے بیان کو انٹرویو کے سیاق و سباق سے ہٹ کر شیئر کیا جا رہا ہے۔

ضیا الدین یوسف زئی نے مفتی شہاب الدین پوپلزئی کی جانب سے ٹوئٹر پر کیے جانے والے سوال کے جواب میں کہا کہ میڈیا اور سوشل میڈیا ان کی بیٹی کے بیان کو غلط پیش کر رہا ہے۔

مفتی شہاب الدین پوپلزئی نے ملالہ یوسف زئی کے والد سے پوچھا تھا کہ ’کل سے سوشل میڈیا پر ایک خبر زیر گردش ہے کہ ان کی بیٹی نے رشتہ ازدواج کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ شادی کرنے سے بہتر ہے کہ پارٹنر شپ کی جائے نہ کہ نکاح‘۔

مفتی شہاب الدین نے ضیا الدین یوسف زئی کو بتایا تھا کہ مذکورہ خبر کے بعد ہم سب شدید اضطراب میں مبتلا ہیں، اس لیے وہ اس کی وضاحت فرمادیں۔

مفتی صاحب کے سوال پر نوبیل انعام یافتہ کارکن کے والد نے جواب دیا کہ ’محترم مفتی پوپلزئی صاحب ایسی کوئی بات نہیں، میڈیا اور سوشل میڈیا نے ان کی بیٹی کے انٹرویو کی اقتباس کو سیاق و سباق سے ہٹ کر اور تبدیل کرکے اپنی تاویلات کے ساتھ شئیر کیا ہے، اور بس‘۔

ضیا الدین یوسف زئی کی جانب سے جواب دیے جانے پر بھی کئی صارفین مطمئن دکھائی نہیں دیے اور انہوں نے ان سمیت ان کی بیٹی پر تنقید کی اور کہا کہ اگر مذکورہ خبر جھوٹ ہے تو تاحال ملالہ یوسف زئی خاموش کیوں ہیں؟

خیال رہے کہ نوبیل انعام یافتہ سماجی کارکن نے ووگ میگزین کو حال ہی میں انٹرویو دیا تھا، وہ میگزین کے آئندہ ماہ کے شمارے کی سرورق کی زینت بنیں گی۔

ملالہ یوسف زئی نے انٹرویو میں ان کہی باتوں پر کھل کر گفتگو کی تھی اور انہوں نے شادی سے متعلق بھی کہا تھا کہ اگر کسی شخص کو دوسرے شخص کا ساتھ چاہیے تو اس کے لازمی نہیں ہے کہ شادی کے کاغذات (نکاح نامے) پر دستخط کیے جائیں.

ملالہ یوسف زئی کا کہنا تھا کہ ان کا فی الحال شادی کا کوئی ارادہ نہیں ہے اور نہ ہی وہ بچے پیدا کرنے کا ارادہ رکھتی ہیں۔ نوبیل انعام یافتہ کارکن کے مذکورہ بیان کے بعد ان پر شدید تنقید کی گئی اور ٹوئٹر پر ان کا نام ٹاپ ٹرینڈ بھی رہا۔

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *