Type to search

خبریں

مفتی عزیز الرحمان کی مدرسے میں طالب علم سے ریپ کی ویڈیو منظر عام پر آگئی

لاہور کے مدرسے جامعہ منظور الاسلامیہ میں ایک طالب علم صابر کے ساتھ مفتی عزیز الرحمان کی ریپ کی ویڈیو وائرل ہوئی ہے۔

 ویڈیو میں ابتدائی طور پر ریپ کے مناظر کے بعد طالب علم صابر کہہ رہا ہے کہ اسے بلیک میل کیا جا رہا ہے اور جان سے مارنے کی دھمکی دی جا رہی ہے۔ اس نے مزید کہا کہ اس نے سب سے بات کی ہے لیکن نہ تو اسے انصاف ملا ہے اور نہ ہی کسی نے اس کی بات سنی ہے جبکہ اس نے سب سے بات کی ہے تو اس کا آخری فیصلہ ہے کہ وہ خودکشی کر رہا ہے کیونکہ انہوں نے اسے جان سے مارنا ہے تو اس سے اچھا ہے کہ وہ خودکشی کر لے۔

مدرسے کے ناظم خلیل اللہ ابراہیم نے ایک ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ صابر نامی لڑکا ان کے پاس کچھ عرصے پہلے آیا تھا اور اس نے مفتی کی شکایت کی تھی لیکن خلیل اللہ ابراہیم کو لڑکے کی بات پر یقین نہیں تھا، تو کچھ عرصے بعد وہ ان کے پاس ویڈیو لے آیا، تو خلیل اللہ ابراہیم نے تحقیق کی تو یہ واقعہ ہوا تھا تو مفتی کو فارغ کر دیا گیا اور اب مفتی کا جامعہ منظور الاسلامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

دوسری طرف جمیل فاروقی نے مدرسے کی جانب سے جاری کیا ہوا ایک خط ٹویٹ کیا اور اس ٹویٹ میں لکھا ”صرف ایک ٹویٹ کے ذریعے ایکسپوز کرنے بعد جامعہ منظور الاسلام نے مفتی عزیر الرحمن کو ایسا فارغ کیا کہ نوٹس کو 12 دن پیچھے لے گئے مطلب اتنی بھی رواداری نہیں رکھی کہ نوٹس آج کی تاریخ کا جاری کیا جاتا۔ لیکن جملوں کی سختی سے اندازہ لگائیں کہ مدرسے کو اندازہ ہے کہ ردعمل سخت آنے والا ہے“

مدرسے کی جانب سے مبینہ طور جاری کردہ اس خط میں مفتی عزیز الرحمان کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا ہے کہ
”مسمی مفتی عزیز الرحمن صاحب
آپ کے متعلق طالب علم کے ساتھ بدفعلی کی نازیبا ویڈیو لے کر رات بارہ بجے محلے کچھ لوگ آئے جو آپ کے گھر بھی آئے اور انہوں نے آپ کے بیٹے کو یہاں چلے جانے کا میسج دیا اور ان کی شکایت کی بنیاد پر ادارہ نے اپنی انتظامیہ کی مشاورت کی اور انتظامیہ کے متفقہ فیصلے کے بعد آپ کو آج مورخہ 03۔ 06۔ 2021 کو ادارے سے فارغ کیا جاتا ہے۔ آپ یہاں سے اپنا سامان اٹھا کر چلے جائیں اور آج سے ادارہ آپ کے کسی قول و فعل اور آپ کے اس عمل سے مکمل برات کا اعلان کرتا اور۔ آپ اپنے ذاتی فعل کے خود ذمہ دار ہیں۔ جاری کردہ (مولانا) اسد اللہ فاروق، مہتمم جامعہ منظور الاسلامیہ لاہور کینٹ ”

دوسری جانب وفاق المدارس العربیہ نے بھی ایک نوٹیفیکیشن کے ذریعے مفتی عزیز الرحمن کو اپنی شوریٰ سے نکالنے کا اعلان بھی کر دیا ہے۔

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق مفتی عزیز الرحمن نے ایک ویڈیو جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ویڈیو اڈھائی سال پرانی ہے اور انہیں چائے میں نشہ آور چیز ملا کر پلائی گئی جس سے وہ اپنے ہوش وحواس میں نہیں رہ سکے۔ یہ پلانٹڈ ویڈیو ہے جس کا مقصد ان کو بدنام کرنا ہے۔

https://www.youtube.com/watch?v=Pq9OXwzxTJE

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *