Type to search

ویڈیوز

حامد میر نے پابندی کے بعد سے پہلے کالم میں اسٹیبلشمنٹ کو کھری کھری سنادیں

میڈیا سنسرشپ ، ججوں کے مابین اختلافات اور حکومت اور حزب اختلاف کے مابین کھینچاتانی۔ حامد میر لکھتے ہیں 1958 میں بھی اسٹیبلشمنٹ نے ملک میں مارشل لاء نافذ کرنے کے لئے اس صورتحال کا فائدہ اٹھایا تھا۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *