Type to search

خبریں

ڈیرہ غازی خان کے قریب بس اور ٹرالر میں تصادم سے 34 افراد جاں بحق

ڈیرہ غازی خان میں جھوک یار شاہ کے قریب بس اور ٹرالر کے درمیان تصادم کے نتیجے میں 30 افراد جاں بحق اور 44 زخمی ہوگئے۔ وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے ایک ٹوئٹر پیغام میں حادثے کے نتیجے میں 30 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی۔

تفصیلات کے مطابق ڈیرہ غازی خان میں تونسہ بائی پاس کے قریب انڈس ہائی وے پر مسافر بس اور مخالف سمت سے آنے والے ٹرالر کے درمیان تصادم ہوگیا، جس کے نتیجے میں بس میں سوار درجنوں افراد زخمی ہوگئے، زخمیوں کو فوری طور پر ڈیرہ غازی خان ٹیچنگ سپتال منتقل کیا گیا جہاں طبی عملے نے ابتدائی طور پر 18 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کی، جب کہ 60 سے زائد زخمیوں میں سے 16 دوران علاج دم توڑ گئے۔

اسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ حادثے میں زخمی ہونے والوں میں سے کچھ کی حالت انتہائی تشویشناک ہے، جس کی وجہ سے جانی نقصان میں مزید اضافے کا خدشہ ہے۔ مقامی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ حادثے کا شکار ہونے والی بس سیالکوٹ سے راجن پور جارہی تھی، بس کے مسافروں کی اکثریت مزدور پیشہ افراد کی تھی اور وہ عید الاضحیٰ منانے اپنے آبائی علاقے جارہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ کب ہم بحیثیت قوم یہ احساس کریں گے کہ ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی جان لیوا ہے، پبلک ٹرانسپورٹ کے ڈرائیورز، لوگوں کی زندگیوں کے امین ہیں، انہیں زیادہ احتیاط کی ضرورت ہے۔

ڈیرہ غازی خان میں المناک ٹریفک حادثے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ وہ حادثے میں اپنے پیاروں کو کھونے والوں کے غم میں برابر کا شریک اور زخمیوں کی جلد صحتیابی کے لیے دعاگو ہوں ہیں، کوئی جمہوری حکومت اس کی متحمل نہیں ہو سکتی کہ المناک حادثے کو اتفاق قرار دے کر ہاتھ پر ہاتھ دہرے بیٹھی رہے، اس طرح کے حادثات کی روک تھام کے لیے کثیر الجہتی اقدامات کی ضرورت ہے۔

وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے ٹریفک حادثے میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے، وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کمشنر ڈیرہ غازی خان ڈویژن سے رابطہ۔ زخمیوں کے علاج معالجے سے متعلق ہدایات دیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ ہماری تمام تر ہمدردیاں جاں بحق افراد کے لواحقین اور زخمیوں کے ساتھ ہیں، غم کی گھڑی میں جاں بحق افرادکے لواحقین کے ساتھ کھڑے ہیں.

Tags:

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *